مسکن / جاسوسی / منزل ۔۔۔۔ از ۔۔۔۔ شکیل ادریس

منزل ۔۔۔۔ از ۔۔۔۔ شکیل ادریس

ٹرائے میسن ایک ماہر اور پیشہ ور مجرم تھا۔
وہ چھوٹے موٹے کاموں میں ہاتھ نہیں ڈالتا تھا، صرف بینکوں ہی کو لوٹتا تھا۔ وہ زندگی کی تیس بہاریں دیکھ چکا تھا اور سرد و گرم  چشیدہ تھا۔ عمرِ عزیز کے تین برس اس نے جیل میں گزارے تھے۔ وہ قرضہ دینے والی کمپنیوں اور ایک سپر مارکیٹ میں بھی ملازمت کرتا رہا بلکہ یوں کہنا زیادہ مناسب ہوگا کہ تجربات کی بھٹی سے گزرتا رہا۔ جیل میں اس نے دوسرے مجرموں کی باتیں انتہائی غور سے سنیں۔ یہ معولم کیا کہ کون کس وجہ سے پکڑا گیا؟ پولیس کیسے مجرموں کی طرف متوجہ ہوتی ہے؟ واردات کرتے وقت کن باتوں کا خیال رکھنا چاہئے اور کن چیزوں کو نظر انداز کر دینا چاہئے؟
ابتداءمیں اس نے جو بھی واردات کی اس میں گرفتارہو گیا۔ وہ سمجھتا تھا کہ یہ اس کا کچا پن تھا۔ بہرحال اس نے سوچ لیا تھا کہ اب وہ جو بھی واردات کرے گا، اس میں اس قسم کی منصوبہ بندی کرے گا کہ گرفتار نہ ہوسکے۔
اٹھائیس برس کی عمر کے بعد جو چھوٹے موٹے ہاتھ مارے اس میں اسے کامیابی ملی۔ اس کی زندگی کی گاڑی چل پڑی۔ ہر چند کہ اسے خوش حال نہیں کہا جا سکتا تھا لیکن وہ بدحال بھی نہیں تھا۔ اس کی جیب میں ڈالر ہوتے تھے۔ وہ سستی چیزیں خرید لیتا اور درمیانے درجے کے ریستورانوں میں کھانا کھا لیا کرتاتھا۔
زندگی گزر رہی تھی لیکن اسے آسودہ نہیں کہا جا سکتا تھا۔ وہ اسے آسودگی کا رنگ دینے کے لئے جتن کر رہا تھا۔ نت نئے منصوبے بنا رہا تھا۔ اپنے پیشے کو وہ اب اپنا کاروبار سمجھتا تھا اور کسی وکیل کی طرح اس کے پاس دلیلیں بھی تھیں۔ جس معاشرے میں وہ رہتا تھا، وہ اس کے خلاف نہیں تھا۔ نہ اس سے کوئی انتقام لے رہا تھا۔ بہرحال کھینچ تان کر وہ یہ سمجھتا تھا کہ اس پر کوئی قانون یا ضابطہ لاگو نہیں ہوتا۔ قانون کو وہ بالائے طاق رکھ کر خود کو اس سے مبرا سمجھتا تھا۔ وہ پڑھا لکھا تھا لیکن کہیں ملازمت کئے بغیر اتنی آمدنی چاہتا تھا کہ زندگی آسودگی سے گزر سکے۔ بس اس کے علاوہ اس کاکوئی اور موقف نہیں تھا۔ اس نے سڑک کے دوسری طرف واقع بینک کی عمارت کو دیکھا۔ وہ اسے لوٹنے کا ارادہ رکھتا تھا، اس لئے گزشتہ دو ہفتوں سے اس کا مشاہدہ کر رہا تھا۔ اس نے اپنی کلائی کی گھڑی دیکھی…. سات بج کر چھیالیس منٹ ہوئے تھے۔ اس کا مطلب یہ تھا کہ بینک منیجر، ہیری جینے کو ایک منٹ کی دیر ہو گئی ہے۔ ہیری ابھی ابھی اپنی کار سے اترا تھا۔ وہ ایک دراز قامت شخص تھا۔ اس کی ایک موٹی سی بیوی اور ایک دبلی پتلی سی بیٹی تھی۔ یہی نہیں اس نے ہیری کے بارے میں اور بھی بہت کچھ معلوم کر لیا تھا۔
ہیری سن بیاسی کی سیڈان میں آتا تھا۔ اسے لاک کر کے بینک میں چلا جاتا تھا پھر اپنی جیب سے چابیاں نکال کر دو تالے کھولتا تھا۔ اس کام میں اسے چھ یا سات سیکنڈ لگتے تھے۔ سات بج کر پچپن منٹ پر پولیس کی ایک گاڑی وہاں سے گزرتی تھی اور کھڑکیوں اور دروازے سے بینک کا جائزہ لیتی تھی۔ پولیس والے یقینا یہ انداز لگاتے تھے کہ کوئی گڑبڑ تو نہیں ہو رہی ہے۔
ٹرائے نے ہیری کے بارے میں تمام معلومات حاصل کر لی تھیں لیکن یہ نہیں جانتا تھا کہ اس کے پاس ایک عدد ریوالور بھی ہے۔ یہ اس کے وہم و گمان میں بھی نہیں تھا…. اس لئے کہ یہ بینک کے اصولوں کے خلاف تھا کہ کوئی آفیسر ریوالور رکھے۔
ایک روز صنعت کار گریفن بینک میں داخل ہوا اور ہیری کے پاس پہنچا تو اس کی نظر ریوالور پر پڑی۔ ”ارے! ہیری یہ کیا لئے بیٹھے ہو؟“ گریفن نے ناگواری سے کہا۔ ”آخر میں تمہیں کیسے یقین دلاﺅں کہ اس بینک میں ڈاکا نہیں پڑ سکتا…. اگر کبھی ایسا ہوا بھی تو تم ڈاکوﺅں کو گولی نہیں مارسکو گے۔ اس لئے کہ انتظامیہ نے سختی سے ہدایت دے رکھی ہے کہ ڈاکوﺅں کے سامنے مزاحمت نہ کی جائے بلکہ اپنی جان بچائی جائے۔“
ہیری نے گریفن کی بات کا کوئی جواب نہیں دیا۔ گریفن اس بات سے واقف نہیں تھا کہ دس برس پہلے سولہ برس کے ایک لڑکے نے اسے رائفل دکھا کر…. جس کی پن ٹوٹی ہوئی تھی…. بینک کو لوٹ لیا تھا۔ ہیری اس بات پر بہت شرمندہ ہوا تھا اور تب سے اس نے اپنی میز کی دراز میں ریوالور رکھنا شروع کر دیا تھا۔ وہ اچھی طرح جانتا تھا کہ یہ بات بینک کے ضابطوں کے خلاف ہے لیکن دوبارہ شرمندگی سے بچنے کے لئے اسے ایسا مجبوراً کرنا پڑا تھا۔ بینک کی دونوں کلرک لڑکیوں کے آنے سے پہلے ہیری اس ریوالور کو میز کی دراز سے نکال کر صاف کرتا تھا اور یہ سوچتا تھا کہ اگر اچانک کوئی لٹیرا آگیا تو وہ کیا کرے گا؟
آٹھ بج کر دس منٹ پر ایک کار آکر بینک کے دروازے پر رکی۔ اس میں سے دو لڑکیاں اتریں۔ ان میں سے ایک کا نام بیسی اور دوسری کا ایلس تھا۔ بیسی اس بینک میں کیشئر تھی اور ایلس کلرک۔ وہ دونوں بینک میں داخل ہو گئیں پھر سوا آٹھ اور ساڑھے آٹھ کے درمیان تین لڑکیاں بینک میں داخل ہوئیں۔ ٹرائے کو ان کی طرف سے اندیشہ تھا کہ وہ الارم نہ بجا دیں۔
ٹرائے باتھ روم میں جا کر شیو کرنے لگا۔ اس نے اپنے بالوں کا رنگ تبدیل کیا…. نیلے رنگ کا سوٹ پہنا۔ اس کے بعد وہ اپنے مکان سے نکلا اور دو بلاک کے فاصلے پر گیا جہاں اس نے اپنی کارکھڑی کی تھی۔ وہ نہیں چاہتا تھا  کہ پڑوسیوں کی اس پر نگاہ پڑے۔ کار لے کر وہ لائبریری کی طرف چلا گیا۔ وہ اپنا بیشتر وقت وہاں گزارتا تھا تاکہ جب اس کے ساتھ کوئی گڑبڑ ہو تو لائبریرین یہ کہہ سکے کہ وہ علم دوست ہے اور بینک ڈکیتی میں ملوث نہیں ہو سکتا۔
وہ اس روز بھی جا کر لائبریری میں بیٹھ گیا۔ ابھی اسے مطالعہ کرتے ہوئے زیادہ دیر نہیں ہوئی تھی کہ اچانک اس کے سرپر قیامت سی ٹوٹ پڑی۔ اس کے سر پر بہت سی کتابیں گر پڑیں۔ اس نے مڑ کر دیکھا۔ ایک لڑکی نے بہت سی کتابیں اٹھا رکھی تھیں۔ اس لئے اس کا توازن بگڑ گیا تھا اور کتابیں اس کے ہاتھ سے گر پڑی تھیں۔
”میں معافی چاہتی ہوں۔“ اس نے معذرت کی۔
”اوہ کوئی بات نہیں۔“ ٹرائے نے کہا، وہ ہلکے سے مسکرایا، پھر اس نے کتابیں اٹھا کر اس کی طرف بڑھائیں اور بولا۔ ”تم انہیں کہاں پہنچانا چاہتی ہو؟“
”اپنی ڈیسک تک۔“ اس نے جواب دیا۔
ٹرائے کو زیادہ زحمت نہیں اٹھانا پڑی، لڑکی اسی ہال میں دوسری میز پر بیٹھی تھی۔ اس نے کتابیں اس جگہ پر رکھ دیں جہاں لڑکی نے بتایا تھا۔
”تمہارا شکریہ۔“ اس نے کہا۔ ”اگر اس لائبریری کے ڈائریکٹر کو یہ معلوم ہو جائے کہ میں نے کسی ممبر کے سر پر کتابیں گرا دی ہیں تو وہ بہت ناراض ہوگا۔“ اس نے اندیشہ ظاہر کیا۔
”کیا تم یہاں کام کرتی ہو؟“ ٹرائے نے پوچھا۔
وہ لڑکی جاذب نگاہ نہیں تھی…. کم از کم لائبریرین تو نہیں لگتی تھی۔
”میں اسسٹنٹ لائبریری ٹیکنیشن ہوں۔“ اس نے اپنا تعارف کرایا۔ وہ بیس بائیس برس کی تھی لیکن انداز بارہ تیرہ برس کی لڑکیوں جیسے تھے۔
ٹرائے مطالعے میں مصروف ہو گیا پھر تھوڑی دیر بعد اسے بھول گیا۔ تقریباً ایک گھنٹے کے وقفے سے اس نے سامنے دیکھا تو اس کی نگاہ لڑکی پر پڑی۔ لڑکی نے فوراً اپنی نظریں ھٹا لیں اس کا چہرہ متغیر ہو گیا تھا۔ اب ٹرائے نے ایک نئے انداز سے اس کا جائزہ لینا شروع کر دیا۔ اس کے بال سنہری تھے اور آنکھوں کا رنگ بھورا تھا۔ ٹرائے نے تنقیدی انداز سے سوچا کہ بھوی آنکھوں پر اس رنگت کے بال نہیں ہونا چاہئیں۔
ٹرائے نے خود کو ٹوکا کہ وہ کیا سوچ رہا ہے؟ لڑکی کے تصور کو اپنے ذہن پر مسلط نہیں کرنا چاہئے۔
تین بجے کے قریب وہ اپنی جگہ سے اٹھا اور اپنی کتاب شیلف میں لے جا کر رکھ دی۔ لڑکی اب اس کی طرف نہیں دیکھ رہی تھی۔ ٹرائے بھی نہیں چاہتا تھا کہ اس کی تصویر لڑکی کی نگاہوں میں بنے۔ اس عمر میں اس قسم کے چونچلے اچھے نہیں لگتے۔ ٹرائے نے خود کو ملامت کی…. البتہ جب وہ نوجوان تھا تو دوسری بات تھی۔
اگلے روز وہ بینک کے سامنے بنے ہوئے ہوٹل میں گیا۔ وہ ایک مہنگا ہوٹل تھا لیکن وہاں جانا اس لئے ضروری تھا کہ وہاں سے بینک صاف دکھائی دیتا تھا اور وہاں آنے جانے والوں پر نگاہ رکھی جا سکتی تھی۔ اس نے اپنے لئے ایک کمراہ بک کرا لیا تھا۔ اس کے سامان میں صرف دو بیگ تھے۔ ان میں سے ایک بیگ دہرے خانے کا تھا۔ اس کے تلے میں ایک پلیٹ لگی تھی جسے اٹھانے پر ایک اور خانہ ظاہر ہوتا تھا۔
اگلے روز ساڑھے سات بجے اس نے اپنا بریف کیس اٹھایا اور ہوٹل سے نکل آیا پھر اس نے دو بلاک کے فاصلے پر ایک ریستوران میں ناشتہ کیا۔ اس نے ایک گھنٹہ وہاں صرف کیا۔ اس ایک گھنٹے میں اس نے اخبار پڑھا اور کافی پی۔ کچھ دیر لوگوں کو دیکھتا رہا پھر وہ واپس ہوٹل چلا آیا۔
یہ معمول اس نے ایک ہفتے تک اختیار کیا۔ وہ چاہتاتھا کہ ہوٹل کا عملہ اسے بریف کیس اٹھائے…. آتا جاتا دیکھتا رہے۔ بینک لوٹنے کے بعد وہ فوراً وہاں سے بھاگ تو نہیں سکے گا اگر اس نے ایسا کیا تو اس کے گرفتار ہونے کے امکانات تھے۔ اس لئے اس نے سوچا تھا کہ وہ کم از کم چار روز تک مزید وہاں ٹھہرے گا…. تاکہ پولیس والے یہ سوچنے لگیں کہ مجرم اس علاقے سے فرار ہو گیا پھر وہ وہاں سے نکلے گا اور کسی دوسری ریاست کی راہ لے گا۔
ریستوران میں بیٹھ کر وقت گزارنا تو اس کی منصوبہ بندی تھی لیکن اس اثنا میں اس کا دماغ بہت زیادہ سوچنے لگتا…. وہ اس ادھیڑ بن میں مبتلا ہو جاتا کہ نہ جانے بینک کے اندر اس کے ساتھ کیا واقعات پیش آئیں گے؟ اسے زیادہ مزاحمت کا سامنا تو نہیں کرنا پڑے گا؟ اگر کوئی اچانک چیخنے لگا تو؟ یا اگر اتفاق سے وہاں کوئی پولیس والا آگیا تو؟
پیر کے روز وہ لائبریری گیا۔ وہ جانتا تھا کہ لڑکی کے ساتھ اسے راہ و رسم بڑھانا پڑے گی۔ اس سے لوگوں کا شبہ اس کی ذات پر کم ہو جائے گا۔
وہ لڑکی اپنے ڈیسک پر موجود تھی اور اسی کی طرف متوجہ تھی۔ ٹرائے نے اپنا حلق خشک ہوتا محسوس کیا۔ اس نے اپنی ہمت کو مجتمع کیا پھر ٹھہرے ہوئے لہجے میں کہا۔ ”کیا آج رات تم میرے ساتھ ڈنر پرچلو گی؟“
”میں…. کیوں؟“ اس کے چہرے کا رنگ تبدیل ہو گیا۔ ”میں ہی کیوں؟ ہاں…. ٹھیک ہے…. میں تیار ہوں۔“ وہ قدرے بدحواسی سے ہنسی۔ ”اس کی ضرورت تو نہیں تھی لیکن تم کہتے ہو تو…. ٹھیک ہے۔ میں چھ بجے لائبریری کے دروازے پر ملوں گی۔“ اس نے تذبذب آمیز لہجے میں کہا۔
ٹرائے کو اس کا اندازہ بہت بھایا۔
ٹرائے نے تھوڑی دیر مطالعہ کیا اور اس کے بعد وہاں سے نکل آیا۔ لائبریری سے چار بلاک کا فاصلہ طے کرنے کے بعد اس نے سوچا کہ وہ کیا کر رہا ہے؟ ایک لائبرین کو اپنے مجرمانہ منصوبے میں کیوں شامل کرنا چاہتا ہے؟ وہ ایک معزز اور سلجھی ہوئی لڑکی لگ رہی تھی۔ ممکن تھا کہ اس نے اس قسم کی احمقانہ محبت پہلے کبھی نہ کی ہو۔
بس جمعے تک کی بات تھی…. اس کے بعد اس کا بیگ ڈالروں سے بھرا ہوگا پھر وہ جہاں جانا چاہے گا، چلا جائے گا…. تو پھر وہ اتنے کم عرصے کے لے اس لڑکی کا روگ کیوں پال رہا ہے؟ یہ صحیح ہے کہ وہ اس کے منصوبے میں کام آئے گی…. مگر اس کے بعد….؟
وہ اچھا نہیں کر رہا تھا۔ مگر پھر اس نے خود کو سمجھایا کہ اچھے منصوبے کے لئے کسی لڑکی کا پہلو میں ہونا ضروری ہے۔ وہ چھ بجے لائبریری کے دروازے پر پہنچا تو اس نے لڑکی کو وہاں کھڑے دیکھا۔ وہ کچھ آگے بڑھے تو اس نے کہا۔ ”میرا نام فیلیسٹی وارن ہے۔“
ٹرائے نے اسے اپنا نام ڈیمنگ بتایا۔ اس لئے کہ یہ نام وہ ہوٹل میں بھی درج کراچکا تھا۔ وہ اسے اوسط درجے کے ایک ہوٹل میں لے گیا۔ لڑکی نے اس کی توقع سے زیادہ کھایا۔ وہ بھوکی معلوم ہوتی تھی۔ یہ دیکھ کر کہ ٹرائے پوری طرح اس کی طرف متوجہ ہے…. اس نے اپنی جیکٹ کے سامنے کے بتن کھول دیئے۔ ٹرائے اس کے نشیب و فراز سے لطف اندوز ہونے لگا۔ لڑکی بلاشبہ بے حد متناسب جسم کی مالک تھی۔ ٹرائے نے دل ہی دل میں اسے سراہا۔
انہوں نے ہلکی پھلکی باتیں کیں…. بے ضرر سی۔ کافی پینے کے دوران فیلیسٹی نے اپنے بارے میں بہت کچھ بتایا۔ وہ چھبیس برس کی تھی۔ اس نے ابھی تک شادی نہیں کی تھی مگر کرنا چاہتی تھی۔ بہت سے لڑکے خواہش مند تھے اور اس کے آگے پیچھےگھومتے تھے۔ اسے لائبریری پسند نہیں تھی۔ وہ خدا پر یقین رکھتی تھی۔ اسے بچے اچھے لگتے تھے، موسیقی پسند تھی۔ وہ اس بات سے بہ خوبی واقف تھی کہ اس کا چہرہ گھریلو قسم کا ہے۔ اس لئے وہ ہاﺅس وائف بن کر ہی رہ سکتی ہے۔
وہ اسے اپنے اپارٹمنٹ پر لے گئی۔ چابی سے دروازہ کھول کر وہ اس کی طرف مڑی۔ ٹرائے نے اسے اپنی بانہوں میں لے لیا۔ فیلیسٹی مسکرائی۔ اس کی مسکراہٹ حوصلہ افزا تھی مگر ٹرائے اس کے ساتھ اندر نہیں جانا چاہتاتھا۔ اس نے سرگوشی کے سے لہجے میں کہا۔ ”اچھا…. اب کل ملاقات ہوگی۔“
لیکن وہ اچھی طرح جانتا تھا کہ وہ جھوٹ بول رہا ہے۔ اس لئے کہ وہ بینک لوٹنے جا رہا تھا پھر اس کے بعد وہ نہ جانے کہاں ہوگا۔ فیلیسٹی سے ملاقات بھی ہو سکے گی یا نہیں۔ اسے پہلے سے سوچ لینا چاہئے تھا کہ ریوالور کی گولی اور رومان ایک ساتھ نہیں چل سکتے۔
جمعے کے دن اس نے چھ بجے اٹھ کر تیاری شروع کر دی۔ شیو کرنے اور کپڑے پہننے کے بعد اس نے اپنا بریف کیس اٹھایا۔ جس کی دو تہیں تھیں۔ نچلی تہہ میں ایک شاٹ گن رکھی تھی۔ وہ تقریباً اٹھارہ انچ کی تھی اور اس کی کارکردگی بہت اچھی تھی۔ اس گن کو لوڈ کرنے کے بعد اس نے چار فالتو کارتوس اپنی جیب میں رکھ لئے پھر اس نے گن کے مختلف حصے علیحدہ کئے اور انہیں اپنے کوٹ کی جیبوں میں چھپا لیا۔ گن کا دستہ نہیں تھا بلکہ اس کی جگہ ربڑ کا ایک کلپ لگا ہوا تھا جو اس نے اپنے بیلٹ سے لٹکا لیا۔
اس کے بعد اس نے بریف کیس کو چند کپڑوں سے بھر لیا۔ جس میں اس کا ہیٹ اور دوسرا کوٹ شامل تھا۔ اس کوٹ کا رنگ پہلے کوٹ سے مختلف تھا…. تاکہ جب وہ بینک سے نکلے تو پہلا کوٹ اتار کر دوسرا پہن سکے۔ مصنوعی ناک اور گالوں پر لگائے جانے والے ربڑ کے پیڈ اس کے کوٹ کی جیب میں تھے۔
یہ اس کے منصوبے میں شامل تھا کہ وہ بینک کو لٹنے کے بعد نہ صرف اپنا حلیہ تبدیل کر لے گا بلکہ اپنا لباس بھی۔ کسی شخص نے اگر اسے غور سے بھی دیکھا ہوگا تو اسے پہچان نہیں سکے گا۔ یعنی نہایت آسانی سے وہ ساری چیزیں اپنی بریف کیس میں رکھ لے گا پھر بینک سے باہر نکل آئے گا۔
اس کی دائیں جیب میں ایک ریوالور بھی تھا جسے وہ نہایت تیزی سے نکال سکتا تھا۔
اس نے ساڑھے چھ بچے ہوٹل چھوڑ دیا اور ایک بس کے ذریعے چار بلاک دور گیا جہاں اس نے اپنی کار پارک کی تھی۔ اس نے کار کا انجن اسٹارٹ کر دیا اور جب اس کا انجن گرم ہو گیا تو اس نے کار آگے بڑھا دی۔ اس وقت سات بج کر بیس منٹ ہوئے تھے۔ ایک ہاتھ سے اسٹیئرنگ تھامے ہوئے اس نے دوسرے ہاتھ سے ناک میں اسپرنگ لگائے پھر گالوں پر ربڑ کے پیڈ لگا لئے جس سے اس کی شخصیت بالکل تبدیل ہو گئی۔ اب وہ پہلے جیسا ٹرائے نہیں تھا…. پھر ہیٹ لگانے کے بعد تو اس کا حلیہ بالکل ہی بدل گیا۔
وہ سست رفتاری سے ڈرائیونگ کرتا ہوا بینک والی سڑک پر آگیا۔ سات بج کر سینتالیس منٹ پر بینک منیجر ہیری کی کار وہاں آگئی۔ سورج نکل آیا تھا اور اس کی کرنیں تمازت پیدا کر رہی تھیں۔ ٹرائے منتظر رہا کہ ہیری بینک کے دروازے پر پہنچ جائے۔ وہ اسی وقت کارروائی کرنا چاہتا تھا۔ اس نے فیلیسٹی کو ہدایت کر دی تھی کہ وہ بھی وہاں پہنچ جائے تاکہ جب ٹرائے اپنی کار وہاں سے نکالے تو پولیس کو اس پر کوئی شبہ نہ ہو۔
اس نے شاٹ گن کے ٹکڑے جوڑ لئے اور جب بینک منیجر ہیری نے دوسری چابی تالے میں گھمائی تو ٹرائے اپنی کار سے اتر کر اس کے پیچھے پہنچ گیا۔ اس نے دھیمی لیکن بھاری آواز میں کہا۔ ”میں تمہارے ساتھ بینک میں داخل ہو رہا ہوں، خبردار…. شور مچانے کی کوشش نہ کرنا۔ ورنہ گولی تمہارے جسم کے پار ہوگی۔“ اس نے ہیری کی کمر میں شاٹ گن کی نال چبھوئی تاکہ اسے معالے کی سنگینی کا احساس ہو جائے۔
”اندر چلو۔“ وہ غرایا۔
ہیری نے سر گھما کر اس کی طرف دیکھا اور پھر دروازہ کھول کر اندر چلا گیا۔ ٹرائے اس کے پیچھے تھا۔
”سکون سے رہو۔“ اس نے کہا۔ ”اگر تم نے میری ہدایات پر عمل کیا تو میں تمہیں کوئی نقصان نہیں پہنچاﺅں گا۔ یہ تو تمہیں ہی پتا ہوگا کہ تمہیں اپنی بیوی اور اکلوتی بیٹی کے لئے زندہ رہنا ہے۔“
ہیری کا چہرہ پیلا پڑ گیا تھا اور اس کا منہ کھلا ہوا تھا۔ ٹرائے جانتا تھا کہ وہ خوف زدہ ہے لیکن اسے بہرحال محتاط رہنا تھا۔ اس لئے کہ وہ کوئی حماقت بھی کر سکتا تھا۔ کبھی حد سے زیادہ ڈرپوک آدمی بھی کوئی حرکت کر سکتا ہے۔
بینک ایک لمبے ہال پر مشتمل تھا۔ اس کے ایک طرف کاﺅنٹر بنا ہوا تھا جس کے پیچھےکلرک بیٹھتے تھے۔ دائیں جانب ایک کمرہ تھا جس میں منیجر بیٹھتا تھا۔ جبکہ والٹ سب سے آخر میں تھا۔
”اب تم کھڑکیوں کے اوپری پردے ہٹاﺅ جیسا کہ تم روز کرتے ہو۔“ ٹرائے نے کہا۔
ہیری نے اس کی ہدایت پر عمل کیا۔
آٹھ بجنے میں تین منٹ پر پولیس کی گاڑی سڑک پر سے گزری۔ سب کچھ معمول کے مطابق ہو رہا تھا پھر آٹھ بج کر پانچ منٹ پر کلرک نے دروازے پر دستک دی۔ ٹرائے نے دروازہ کھولا اور جب کلرک اندر آگیا تو اس نے شاٹ گن اسے دکھاتے ہوئے کہا۔ ”بین! اپنے باس کے پاس جاکر کھڑے ہوجاﺅ۔ شوروغل نہ مچانا ورنہ تم اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھو گے۔“
شارٹ گن دیکھ کر وہ خوف زدہ ہو گیا۔ ”گو…. گو…. گولی نہ مارنا۔“ اس نے ہکلاتے ہوئے کہا۔ ”کک…. کیا تم بینک کو لوٹنے آئے ہو؟“
”شٹ اپ! جیسا کہہ رہا ہوں ویسا ہی کرو۔ جا کر ہیری کے پاس کھڑے ہو جاﺅ۔“
بین نے اس کی ہدایت پر عمل کیا۔ ٹرائے نے شاٹ گن کو سامنے کر دیا تاکہ وہ دونوں اس سے دہشت زدہ رہیں۔ تھوڑی دیر بعد بیسی اور ایلس آگئیں۔ ایلس نے دروازے پر دستک دی جبکہ بیسی بہ دستور کار کے قریب کھڑی اپنے شوہر سے گفتگو میں مصروف تھی۔ وہ کار کی کھڑکی پر جھکی ہوئی تھی۔
بینک کا گارڈ ابھی آیا نہیں تھا…. اس لئے ٹرائے کو جا کر بینک کا دروازہ کھولنا پڑ رہا تھا۔ وہ اس بات کا انتظار کرنے لگا کہ بیسی بھی دروازے تک آجائے اور وہ دونوں ساتھ ہی بینک میں داخل ہوں۔
ایلس نے دوبارہ دروازے پر دستک دی۔ اس بار آواز پہلے سے تیز تھی۔
ٹرائے نے جا کر دروازہ کھول دیا۔ ایلس اندر آگئی۔ اس نے مڑ کر بیسی کو آواز دی۔ ٹرائے کا خون منجمد ہونےلگا اگر ایلس نے آنکھ اٹھ اکر اس کی طرف دیکھ لیا تو؟
گزرنے والا ہر لمحہ اس کے لئے ہیجان خیز تھا۔ کسی لمحے کچھ بھی ہو سکتا تھا۔
بالآخر سینڈلوں کی کھٹ کھٹ سنائی دی اور پھر بیسی بھی اندر آگئی۔ وہ دونوں زندگی سے بھرپور قہقہے لگا رہی تھیں مگر جب ان کی نگاہ ٹرائے کی شاٹ گن پر پڑی تو ان کے قہقہوں نے دم توڑ دیا۔ وہ ساکت ہو گئیں۔ ایسا معلوم ہو رہا تھا جیسے فرشتہ ء اجل نے ان کی روح قبض کر لی ہو۔
”شوروغل مچانے کی کوئی ضرورت نہیں۔“ ٹرائے نے کہا۔ ”میں تمہیں کچھ نہیں کہوں گا۔“
پھر تینوں کلرک لڑکیاں بھی آگئیں۔ ٹرائے نے انہیں اپنی نشستوں پر بیٹھنے کا اشارہ کیا۔ انہوں نے اس کے حکم کی تعمیل کی۔ بینک کا کم و بیش سارا اسٹاف آگیا تھا۔
”میں یہ بات اچھی طرح جانتا ہوں کہ یہاں ایک بار پہلے بھی ڈاکا پڑ چکا ہے۔“ ٹرائے نے ان لوگوں سے کہا۔ ”اس لئے پولیس نے یہاں ایک الارم لگایا ہے۔ تم میں سے کوئی اس کا بٹن دبائے گا تو پولیس فوراً یہاں آجائے گی لیکن آج ایسا ہوا تو میں اس شخص کی زندگی کی کوئی ضمانت نہیں دے سکتا۔ میں اس شخص کو گولی مار دوں گا جو اس بٹن کو دبائے گا۔“
اس نے اپنے لفظوں کا اثر سب لوگوں کے چہرے پر دیکھا۔ وہ سب بے بسی سے پلکیں جھپکا رہے تھے۔
”اب تم جا کر اپنی سیٹ پر بیٹھ جاﺅ۔“ ٹرائے نے ہیری کو حکم دیا پھر اس نے اپنی گھڑی کی طرف دیکھ کر کہا۔ ”ٹائم لاک تین منٹ کے بعد آف ہو جائے گا۔ ٹھیک ہے نا ہیری؟“
ہیری کچھ نہ بولا۔
آٹھ بج کر اکتیس منٹ پر ٹرائے نے کہا۔ ”ہیری! اب تم والٹ کا دروازہ کھولو۔“ ہیری اسے گھورتا رہا۔ اس نے اپنی جگہ سے حرکت نہیں کی۔
”دروازہ کھولو۔“ اس نے دوبارہ کہا اور شاٹ گن کا رُخ اس کے پیٹ کی طرف کر دیا۔
”یہ جیسا کہہ رہا ہے…. اس پر عمل کرو ہیری!“ بیسی نے چیخ کر کہا۔ ”دیکھتے نہیں ہو کہ یہ لٹیرا ہے اور اس کے ہاتھ میں شاٹ گن ہے۔ یہ تمہارے پیٹ میں سوراخ کر دے گا۔“
ہیری اب بھی خاموشی سے اسے گھور رہا تھا۔ ٹرائے کو اس پر غصہ آنے لگا۔ اس وقت نہ جانے کیسے اس کے سامنے فیلیسٹی کا چہرہ آگیا وہ اس کی طرف ناگواری سے دیکھ رہی تھی۔ اس نے اپنے سر کو جھٹکا اور اس کے تصور سے نجات حاصل کی۔ اس نے فیلیسٹی کو ایسا وقت دیا تھا کہ جب وہ بینک سے رقم لے کر نکلے تو وہ ساتھ ہو۔ فیلیسٹی کا ساتھ اسے پولیس سے محفوظ رکھ سکتا تھا۔ پولیس بہرحال خواتین کے ساتھ رعایت کرتی ہے۔
آخری ہیری نے اپنی جگہ سے اٹھ کر والٹ کا دروازہ کھول دیا۔ ”ٹھیک ہے ہیری! اب دوبارہ اپنی جگہ پر بیٹھ جاﺅ۔“ اس نے حکم دیا۔
ہیری اپنی سیٹ پر چلا گیا۔
”اوکے…. ایلس! اب تم والٹ میں جا کر اس تھیلے کو نوٹون سے بھردو۔ چھوٹی مالیٹ کے نوٹوں کی طرف توجہ نہ دینا۔“ اس نے ہدایت دی۔
ایلس اب سسکیاں لے رہی تھی۔ اس نے بےبسی سے ہیری کی طرف دیکھا۔ ہیری نے اپنے سر کو اثباتی جنبش دی۔ ”ایلس ! وہی کچھ کرو جو یہ کہہ رہا ہے۔“
جب ایلس والٹ میں چلی گئی تو ٹرائے نے اپنا رخ تبدیل کر لیا تاکہ اس پر نگاہ رکھ سکے۔ ”اوکے بےبی! چالاکی کرنے کی کوشش نہ کرنا۔“ ٹرائے نے اسے دھمکی دی۔ ”اگر تم نے والٹ میں بڑی مالیت کا کوئی نوٹ چھوڑا تو مجھ سے برا کوئی نہیں ہوگا۔“
والٹ میں رقم کا ایک چرمی بیگ رکھا تھا۔ ایلس نے اسے کھول کر نوٹوں کی گڈیاں اس تھیلے میں رکھنا شروع کر دیں جو ٹرائے نے اسے دیا تھا۔ وہ مڑ مڑ کر اس کی طرف خوف زدہ نظروں سے دیکھ رہی تھی۔ ٹرائے کا دل خوشی سے لبریز تھا…. اس لئے کہ وہ کامیابی سے بہت قریب تھا۔
بہرحال اس کی تمام تر توجہ ہیری کی طرف تھی…. اس لئے کہ وہ کوئی گڑبڑکر سکتا تھا۔ ہیری تیزی سے سوچ رہا تھا کہ اس صورتحال پر کیسے قابو پایا جاسکتا ہے؟
جب ایلس اس تھیلے کو نوٹوں سے بھر کر باہر آگئی تو ٹرائے کی خوشی کا کوئی ٹھکانا نہ رہا۔ یہ اس کی زندگی کی پہلی سب سے بڑی واردات تھی…. آخری بھی۔ اس لئے کہ اب وہ مہذب اور شریف لوگوں کی طرح رہنا چاہت اتھا۔
اس نے رقم سے بھرا ہوا تھیلا ایلس سے لیا اور اس کے بعد مڑا مگر تھیلا فرش پر گر گیا۔ ٹرائے نے جھک کر اس تھیلے کو اٹھالیا…. پھر وہ سیدھا ہوا تو ٹھیک اسی وقت ایک زور دار دھماکا ہوا۔ ایسا معلوم ہوا جیسے اس کی کمر پر کسی نے لوہے کا بھاری ہتھوڑا مار دیا ہے۔ کمر میں ناقابل برداشت تکلیف ہو رہی تھی۔ اس کا سر چکرانے لگا، وہ فرش پر گر پڑا۔ گھٹنوں اور ہاتھوں کے بل…. کسی چوپائے کی طرح۔
اسے معلوم ہو گیا کہ اسے گولی ماری گئی ہے۔ گولی کہاں لگی تھی؟ ابھی اس کا اندازہ نہیں ہو رہا تھا۔ا سے دوسری گولی کا انتظار تھا لیکن جب دوسری گولی نہیں آئی تو وہ فرش سے اٹھ کھڑا ہوا۔ اس نے شاٹ گن اپنے ہاتھ میں سنبھالی ہوئی تھی۔ رقم کا تھیلا معلوم نہیں کہاں گیا تھا؟ بہرحال اس وقت رقم نہیں…. یہ بات اس کے لئے اہمیت رکھتی تھی کہ اسے گولی کس نے ماری ہے؟ گولی کا جواب وہ گولی سے دینا چاہتا تھا۔
ہیری اپنی جگہ سے کھڑا ہو گیا۔ اس کے ہاتھ میں نیلے رنگ کا اعشاریہ چار پانچ کا ریوالور تھا۔ ٹرائے نے اپنی شاٹ گن کا رخ اس کی طرف کر دیا اور ٹریگر پر دباﺅ ڈالا۔ ہیری کی آنکھین خوف سے پھٹ گئیں۔ اس نے ریوالور کو اوپر اٹھایا…. تاکہ فائر کر سکے لیکن اسے دیر ہو گئی تھی۔ اسے گولی چلانے کا موقع نہیں ملا اور ٹرائے کی شاٹ گن کی گولی اس کے سینے پر لگی۔ اس کا سینہ لہولہان ہو گیا۔
ایلس بدحواس ہو کر چیخنے لگی۔ بیسی اتنی خوف زدہ تھی کہ اپنی جگہ سے حرکت نہ کر سکی۔ بین اپنی جان بچانے کے لئے نیچے بیٹھ گیا۔ اس وقت وہ دوڈیسکوں کے درمیان تھا اور یہ ساری کارروائی دیکھ رہا تھا۔ ٹرائے کا بایاں ہاتھ خون میں ڈوبا ہوا تھا اور خون اس کی انگلیوں سے ٹپکتا ہوا فرش پر گر رہا تھا۔ اس کے شانے سے ٹیسیں اٹھ رہی تھیں…. ناقابل برداشت ٹیسیں۔ اس کا سر چکرا رہا تھا۔ نوٹوں سے بھرا وہ تھیلا اس کے قدموں میں پڑا تھا جس کے لئے اس نے جان کی بازی لگا دی تھی۔ ٹرائے نے تیزی سے شاٹ گن کے مختلف حصے الگ کئے اور اس تھیلے کو اٹھالیا…. پھر وہ بینک سے نکل آیا۔ اسے معلوم تھا کہ بینک کے عملے میں سے کوئی دوسرا اس کے پیچھے آنے کی ہمت نہیں کرے گا۔
ٹرائے کی آنکھیں دھندلا رہی تھیں لیکن وہ اپنے قدموں کو جما جما کر چل رہا تھا۔ سڑک پار سنہری بالوں والی ایک عورت کھڑی تھی۔ وہ اسے پہچان نہیں سکا مگر اسے نہ جانے کیوں یہ محسوس ہو رہا تھا کہ وہ فیلیسٹی ہے…. جسے اس نے بلایا تھا۔ اس کے شانے سے خون ٹپک رہا تھا، اس لئے وہ ہوٹل واپس نہیں جا سکتا تھا۔ البتہ فیلیسٹی کو ساتھ لینا ضروری تھا۔ ٹرائے نے اپنی ناک سے اسپرنگ نکال لیا اور گالوں سے پلاسٹک کے ٹکڑے اکھاڑ لئے۔
اس عورت نے سڑک پار کی وہ نزدیک آئی تو معلوم ہوا کہ وہ فیلیسٹی ہے۔
”ارے یہ کیا….؟ تم تو بہت زخمی ہو۔“ اس نے تشویش سے کہا۔
”گاڑی میں بیٹھ جاﺅ۔“ ٹرائے نے اپنی حالت پر قابو پاتے ہوئے کہا۔
مگر تم کہاں سے آرہے ہو؟“ فیلیسٹی نے پوچھا۔
”سوالات میں وقت نہ ضائع کرو۔“ اس نے خشک لہجے میں کہا۔
فلیسٹی کی زبان پر بہت سے سوالات مچل رہے تھے لیکن اس نے ٹرائے کی ہدایت پر عمل کرتے ہوئے کار کا دروازہ کھولا اور پسنجر سیٹ پر بیٹھ گئی۔ جب ٹرائے ڈرائیونگ سیٹ پر بیٹھا تو فیلیسٹی نے پوچھا۔ ”کیا تم اس حالت میں ڈرائیونگ کر لو گے؟“
”ہاں۔“ اس نے جواب دیا۔
کار اسٹارٹ ہوتے ہی فیلیسٹی کی زبان چلنے لگی۔ ”میں نے تمہیں بینک سے نکلتے دیکھا ہے۔ وہاں کیا ہوا تھا؟ تمہارے شانے میں گولی کس نے ماری؟ مجھے تو ایسا لگ رہا ہے جیسے کسی نے تم پر فائر کیا ہے؟ کیا تم نے بینک میں کوئی واردات کی ہے؟ اگر ایسا ہے تو مجھے یہیں اتار دو۔ میں تو تمہیں ایک پڑھا لکھا انسان سمجھتی تھی۔“
ٹرائے کی آنکھوں کی دھندلاہٹ مزید بڑھ گئی۔ اسٹیئرنگ اس کے ہاتھوں سے چھوٹنے لگا۔ کار ایک بار کسی سانپ کی طرح سڑک پر لہرائی۔ آخری لمحوں تک اسے وہ کار نظر نہیں آسکی جو سامنے سے آرہی تھی۔ نتیجہ یہ ہوا کہ گاڑی اس سے جا کر ٹکرا گئی۔ زور کا دھماکا ہوا۔ ونڈو اسکرین ٹوٹ گئی اور شیشے کی لاتعداد کرچیاں بکھر گئیں اسٹیئرنگ ٹرائے کی پسلیوں کو توڑ کر اندر گھس گیا۔ فیلیسٹی کا سر ڈیش بورڈ سے جا کر ٹکرایا۔ سامنے والی کار کا انجن بہت طاقتور تھا اس لئے کار کا اگلا حصہ پچک گیا اور ٹرائے کی کی ٹانگیں ٹوٹ گئیں۔ نوٹوں کا تھیلا اچھل کر باہر جا گرا۔ وہ کھل گیا تھا اور لاتعداد نوٹ فضا میں اڑنے لگے۔
….٭….

بارے KAHAANY.COM

Check Also

” کڑوی تدبیر "

کافی ہیلن کی زندگی کا محور بن گئی تھی۔ جی ہاں! وہی کافی جس کی ہر …

110 comments

  1. Nice post. I was checking constantly this blog and I am inspired! Extremely helpful info specially the ultimate part 🙂 I deal with such information much. I was seeking this certain information for a long time. Thank you and good luck.

  2. Hay. It’s easier said than done, but I’ll try to do it.

  3. That’s too bad. I went to the show to kill time.

  4. I’m so happy! He ate three big fish. No wonder he’s sick.

  5. Have you ever thought about creating an ebook
    or guest authoring on other blogs? I have a blog based on the same ideas you discuss and would really like to
    have you share some stories/information. I know my subscribers would enjoy your work.

    If you are even remotely interested, feel free to send me an e-mail.

  6. Oh my goodness! Incredible article dude!
    Thank you, However I am having difficulties with your RSS.
    I don’t know why I cannot subscribe to it. Is there anybody else having similar RSS issues?
    Anyone who knows the answer will you kindly respond?
    Thanks!!

  7. I really like your blog.. very nice colors & theme.

    Did you design this website yourself or did you hire someone to do it for you?

    Plz reply as I’m looking to design my own blog and would like to find out where u got
    this from. thanks a lot

  8. I’ve learn several excellent stuff here. Certainly value bookmarking for revisiting.
    I surprise how so much attempt you place to make this type of magnificent informative site.

  9. Hey there, I think your blog might be having browser compatibility issues.
    When I look at your blog site in Chrome, it looks fine but when opening in Internet Explorer, it has some overlapping.
    I just wanted to give you a quick heads up! Other then that,
    terrific blog!

  10. Please let me know if you’re looking for a article author for
    your site. You have some really great posts and I believe I would be a good asset.
    If you ever want to take some of the load off, I’d
    absolutely love to write some material for your blog in exchange for a link back to mine.

    Please send me an e-mail if interested. Kudos!

  11. Great blog you have here but I was curious about if you knew of
    any message boards that cover the same topics
    discussed in this article? I’d really love to be a part of community where I can get opinions from other experienced people that share the same
    interest. If you have any recommendations, please let me know.

    Cheers!

  12. My programmer is trying to persuade me to move to .net from PHP.
    I have always disliked the idea because of the expenses.

    But he’s tryiong none the less. I’ve been using Movable-type on a variety of
    websites for about a year and am anxious about switching to another platform.

    I have heard excellent things about blogengine.net.
    Is there a way I can import all my wordpress content into it?

    Any help would be really appreciated!

  13. I loved as much as you’ll receive carried out right here.
    The sketch is attractive, your authored subject matter
    stylish. nonetheless, you command get bought an edginess
    over that you wish be delivering the following. unwell unquestionably come further formerly again since
    exactly the same nearly a lot often inside case you shield this increase.

  14. Wow, fantastic blog layout! How long have you been blogging for?
    you made blogging look easy. The overall look of your site
    is fantastic, let alone the content!

  15. I’d like to find out more? I’d like to find out more details.

  16. Pretty nice post. I simply stumbled upon your blog and wanted
    to mention that I have truly loved browsing your weblog posts.
    After all I will be subscribing on your feed and I hope you write again very soon!

  17. Thanks for finally talking about >منزل ۔۔۔۔ از ۔۔۔۔ شکیل ادریس – کہانی <Liked it!

  18. My coder is trying to persuade me to move to .net from PHP.

    I have always disliked the idea because of the costs.
    But he’s tryiong none the less. I’ve been using WordPress on a variety of websites for about a year and am concerned about
    switching to another platform. I have heard good things about blogengine.net.

    Is there a way I can import all my wordpress content into it?

    Any help would be greatly appreciated!

  19. Hello, I believe your site might be having browser compatibility issues.

    When I look at your site in Safari, it looks fine however, when opening in Internet Explorer, it’s got
    some overlapping issues. I just wanted to give you a quick heads up!
    Aside from that, great site!

  20. Fantastic site. Plenty of helpful information here.

    I am sending it to some buddies ans also sharing in delicious.
    And certainly, thank you on your effort!

  21. For most recent information you have to visit internet and on world-wide-web I found this website as a finest site
    for most up-to-date updates.

  22. It’s the best time to make some plans for the future and it is time to be happy.
    I’ve read this post and if I could I wish to suggest you few interesting things or advice.
    Perhaps you can write next articles referring to this
    article. I want to read even more things about it!

  23. Hi there to every one, it’s in fact a nice for me to pay a visit this website, it includes helpful Information.

  24. Thanks for a marvelous posting! I certainly enjoyed
    reading it, you’re a great author. I will be sure to bookmark your blog and may come back down the
    road. I want to encourage yourself to continue your great work, have a nice weekend!

  25. I was recommended this blog by my cousin. I am not sure whether this post is written by him
    as nobody else know such detailed about my difficulty. You are amazing!

    Thanks!

  26. I simply could not leave your website before suggesting that
    I really enjoyed the usual info an individual supply in your guests?
    Is gonna be back incessantly to inspect new posts

  27. With havin so much content do you ever run into any problems of plagorism or copyright
    infringement? My site has a lot of exclusive content I’ve either created myself or outsourced but it appears a lot of
    it is popping it up all over the internet without my agreement.
    Do you know any techniques to help protect against content from being stolen? I’d genuinely appreciate it.

  28. Genuinely no matter if someone doesn’t understand then its up to other people that they will
    assist, so here it takes place.

  29. Pretty part of content. I simply stumbled upon your web site
    and in accession capital to assert that I get in fact enjoyed account your blog
    posts. Anyway I’ll be subscribing to your feeds
    or even I fulfillment you get right of entry
    to persistently fast.

  30. Peculiar article, just what I wanted to find.

  31. Superb blog! Do you have any tips and hints for aspiring writers?
    I’m hoping to start my own blog soon but I’m a little lost on everything.
    Would you recommend starting with a free platform like WordPress or go for a paid option?
    There are so many choices out there that I’m completely confused
    .. Any suggestions? Appreciate it!

  32. Wow, incredible weblog layout! How lengthy have you been running a blog for?
    you made blogging glance easy. The full look of your web site is
    wonderful, let alone the content material!

  33. It’s remarkable in favor of me to have a site,
    which is valuable in favor of my know-how. thanks admin

  34. Hi there i am kavin, its my first occasion to commenting
    anywhere, when i read this paragraph i thought i could also create
    comment due to this brilliant article.

  35. I’m curious to find out what blog platform you have been working with?
    I’m experiencing some small security problems with my latest blog and I’d like to find something more safeguarded.
    Do you have any solutions?

  36. If some one desires expert view concerning blogging after that i recommend him/her to pay a visit
    this web site, Keep up the pleasant job.

  37. When I initially commented I appear to have clicked the
    -Notify me when new comments are added- checkbox and from now
    on whenever a comment is added I recieve 4 emails with the
    same comment. Perhaps there is an easy method you
    are able to remove me from that service? Appreciate it!

  38. Good blog post. I definitely love this website. Keep writing!

  39. Way cool! Some very valid points! I appreciate you writing this article plus
    the rest of the site is also really good.

  40. It’s a shame you don’t have a donate button! I’d definitely donate to this excellent blog!

    I suppose for now i’ll settle for book-marking and adding
    your RSS feed to my Google account. I look forward to fresh updates
    and will share this site with my Facebook group.
    Chat soon!

  41. Valuable information. Lucky me I found your site unintentionally, and I
    am shocked why this accident didn’t happened earlier! I
    bookmarked it.

  42. I savor, lead to I discovered just what I was having a
    look for. You have ended my four day long hunt! God Bless you man. Have a great
    day. Bye

  43. continuously i used to read smaller articles
    that as well clear their motive, and that is also happening with this paragraph which I am reading here.

  44. Wow that was strange. I just wrote an extremely long comment but after I
    clicked submit my comment didn’t show up. Grrrr…
    well I’m not writing all that over again. Regardless, just wanted to say fantastic blog!

  45. Very rapidly this site will be famous amid all blog visitors,
    due to it’s nice articles

  46. Excellent web site you have got here.. It’s difficult
    to find high-quality writing like yours these days. I seriously appreciate people like you!
    Take care!!

  47. Very good info. Lucky me I discovered your site by accident (stumbleupon).

    I’ve saved it for later!

  48. Just desire to say your article is as amazing. The clearness in your post
    is just excellent and i can assume you are an expert on this subject.
    Well with your permission let me to grab your RSS feed to keep up to date with forthcoming post.
    Thanks a million and please keep up the enjoyable work.

  49. I’m really impressed with your writing abilities as well as with the structure in your blog.

    Is this a paid topic or did you customize it yourself?
    Anyway stay up the excellent quality writing, it is uncommon to see a nice blog like this one these days..

  50. Thanks for sharing your thoughts. I truly appreciate your
    efforts and I am waiting for your further write ups
    thank you once again.

  51. Its like you read my mind! You appear to know a lot about this, like you wrote the book in it or something.
    I think that you can do with a few pics to drive the message home
    a little bit, but other than that, this is fantastic blog.
    A great read. I will definitely be back.

  52. When I originally commented I clicked the "Notify me when new comments are added” checkbox
    and now each time a comment is added I get four e-mails with the same comment.

    Is there any way you can remove me from that service?
    Cheers!

  53. It’s best to participate in a contest for top-of-the-line blogs on the web. I will advocate this site!

  54. Excellent post. I was checking continuously this weblog and I am
    impressed! Extremely useful info particularly the closing phase 🙂 I maintain such info much.
    I was seeking this particular information for a long
    time. Thank you and best of luck.

  55. I visited many sites except the audio feature for audio songs current at
    this website is actually superb.

  56. I was recommended this website by my cousin. I’m not sure whether this
    post is written by him as no one else know such detailed about my difficulty.
    You’re amazing! Thanks!

  57. hello there and thank you for your info – I have certainly picked up
    anything new from right here. I did however expertise a few technical issues using this web site, as I experienced to reload
    the site many times previous to I could get it to load
    correctly. I had been wondering if your web host is OK?
    Not that I’m complaining, but slow loading instances
    times will very frequently affect your placement
    in google and could damage your high-quality score if advertising and marketing with Adwords.
    Well I am adding this RSS to my email and can look out for much more
    of your respective fascinating content. Ensure
    that you update this again very soon.

  58. Excellent post. I’m facing a few of these issues as well..

  59. Post writing is also a excitement, if you be acquainted
    with after that you can write otherwise it is difficult to
    write.

  60. I like the helpful info you provide in your articles. I’ll bookmark your blog and check again here
    regularly. I am quite sure I’ll learn many new stuff right here!
    Best of luck for the next!

  61. I’m extremely impressed with your writing skills as well as with
    the layout on your blog. Is this a paid theme or did
    you modify it yourself? Anyway keep up the nice quality writing,
    it is rare to see a great blog like this one these days.

  62. If you want to take a great deal from this paragraph then you
    have to apply these methods to your won blog.

  63. This piece of writing is genuinely a fastidious one it assists new net
    viewers, who are wishing for blogging.

  64. Thanks for every other informative site. The place else may I get that kind of info written in such a perfect approach?
    I’ve a challenge that I’m just now running
    on, and I’ve been on the glance out for such info.

  65. I absolutely love your blog and find a lot of your post’s to be
    just what I’m looking for. can you offer guest
    writers to write content for you? I wouldn’t mind creating a
    post or elaborating on most of the subjects you write with regards
    to here. Again, awesome weblog!

  66. Hurrah, that’s what I was seeking for, what a data! present here
    at this website, thanks admin of this web site.

  67. Appreciate the recommendation. Let me try it out.

  68. If some one needs to be updated with latest technologies then he must be pay a
    quick visit this web site and be up to date daily.

  69. Thanks for any other wonderful post. The place else could anyone get that kind of information in such a perfect way of writing?

    I have a presentation subsequent week, and I’m on the look for such info.

  70. It is perfect time to make some plans for the future and it is time to be happy.
    I’ve read this post and if I could I desire to suggest you some
    interesting things or tips. Maybe you can write next articles
    referring to this article. I desire to read even more things about it!

  71. Have you ever thought about writing an ebook or guest authoring on other
    blogs? I have a blog based on the same information you discuss and would
    really like to have you share some stories/information. I know my audience
    would enjoy your work. If you are even remotely
    interested, feel free to shoot me an e mail.

  72. Hey! Do you know if they make any plugins to safeguard against hackers?
    I’m kinda paranoid about losing everything I’ve worked hard on. Any suggestions?

  73. What’s Happening i’m new to this, I stumbled upon this I have found It absolutely useful and it has aided me out loads.
    I’m hoping to give a contribution & assist other users like its aided
    me. Good job.

  74. It’s really a great and useful piece of info. I am satisfied that
    you shared this useful information with us.
    Please stay us informed like this. Thank you for sharing.

  75. This design is wicked! You obviously know how to keep a reader entertained.

    Between your wit and your videos, I was almost moved to
    start my own blog (well, almost…HaHa!) Excellent job.

    I really enjoyed what you had to say, and more than that, how you presented it.
    Too cool!

  76. Greetings from Colorado! I’m bored to tears at work so I decided to browse
    your site on my iphone during lunch break. I enjoy
    the info you present here and can’t wait to take a look when I get home.
    I’m surprised at how fast your blog loaded on my phone ..
    I’m not even using WIFI, just 3G .. Anyways, wonderful site!

  77. Howdy! Do you know if they make any plugins to assist with SEO?
    I’m trying to get my blog to rank for some targeted keywords but I’m not
    seeing very good gains. If you know of any please share.
    Thank you!

  78. Nice response in return of this query with real arguments
    and explaining the whole thing concerning that.

  79. Excellent post. I was checking continuously this blog and I am impressed!
    Very useful info specially the last part 🙂 I care for such information a
    lot. I was looking for this particular info for a long
    time. Thank you and best of luck.

  80. Nice write up. Thumbs up! i like hermosa beach seo hermosa beach and grillo jesse. curious about hermosa beach real estate pinterest marketing and data-mining? were you aware there’s hermosa beach business making pinterest advertising?

  81. When I originally left a comment I seem to have clicked on the -Notify me when new
    comments are added- checkbox and now every time a comment is added I recieve four emails with
    the exact same comment. Is there an easy method you can remove me from that service?

    Cheers!

  82. You are a very persuasive writer. check out all the things a brand marketing, lead acquisition marketing plus seo marketing.

  83. Thumbs up! i am huge fan of and jesse grillo. Making real estate agent print plus customer acquisition advertising and big data.

  84. Great read. working on jesse grillo and . Real estate agents, in need of brand advertising? jesse grillo delivers customer converting brand advertising, pinterest marketing plus lead generation marketing.

  85. Nice read. love cake decorating and aquariums.

  86. Hey, thanks for the blog post.Thanks Again. Keep writing.

  87. I’m massively pleased to get this website. I want to to thank you for your time due to this wonderful read!!
    I genuinely loved every little bit of it and I have you saved as
    a favorite to look at brand new information on your site.

  88. Very quickly this site will be famous amid all blogging and site-building people,
    due to it’s nice articles

  89. This article will help the internet people for
    setting up new web site or even a blog from start to end.

  90. My partner and I stumbled over here from a different
    page and thought I might as well check things out.
    I like what I see so now i’m following you. Look
    forward to exploring your web page repeatedly.

  91. It is like you read my thoughts! I hate that my Iphone battery is about dead.

  92. I will just say great! Great little bit of written content. Thanks for sharing this interesting blog with us. You appear to know a lot about this.

  93. Very nice article. Thx again. To think, I was confused a minute ago. Exceptionally well written!

  94. Your article is loved by my friend. This is an excellent, an eye-opener for sure!

  95. You should be thanked more often. So thank you!! I know top WordPress professionals would love this. A awesome article.

  96. Thumbs up! Really Cool. You have a great sense of humor.

  97. You are obviously very knowledgeable. I am going to follow you on Reddit. This website has some interesting and great content. Such a deep answer! I just stumbled upon your posts.

  98. I have been exploring for a bit for any high quality articles or weblog posts in this kind of house .
    Exploring in Yahoo I at last stumbled upon this website.
    Studying this info So i am satisfied to convey that I have a very excellent uncanny feeling
    I discovered exactly what I needed. I most unquestionably will make certain to do not omit this web site and provides it a look on a constant basis.

  99. Greetings! This is my first visit to your blog! We are a group of volunteers and starting a new project in a community
    in the same niche. Your blog provided us valuable information to work on. You have done a
    extraordinary job!

  100. Hi! Do you know if they make any plugins to protect against hackers?
    I’m kinda paranoid about losing everything I’ve worked hard on. Any
    recommendations?

  101. You should be thanked more often. So thank you!! Now I feel stupid. Any additional suggestions or hints? I am bored to death at work so I decided to browse your blogs on my iphone during lunch break. Ever make it out to Maryland?

  102. It’s amazing to visit this site and reading the views of all
    mates concerning this paragraph, while I am also eager of getting experience.

  103. Appreciate the recommendation. Let me try it out.

  104. magnificent job on this article! Found this on WordPress and I am so glad I did I know top Pinterest professionals would love this. You are my savior. Super strange, your website was running when I turned on my phone.

  105. I actually felt my brain growing when I browsed your article. Any additional suggestions or hints? I am really impressed with your writing skills as well as with the layout on your blog. good job on this article! I have been looking everywhere for this!

  106. I am bored to death at work so I decided to browse your blog on my iphone during lunch break. You saved me a lot of hassle just now. I bet you sweat glitter.

  107. There are a few fascinating points soon enough here but I don’t determine if I see every one of them center to heart. There is certainly some validity but I am going to take hold opinion until I take a look at it further. Good write-up , thanks therefore we want much more! Included with FeedBurner also

  108. Similarly to Knight and Day from earlier this summer, once the second half rolls around, most of the appeal is lost, and the movie becomes more of a financial thriller than a buddy-cop comedy.

  1. Pingback: human hair weave

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Translate »
error: Content is protected !!